Jewargi me Khana Kaba ki Behurmati aur Dargah Hazrat Shahbaz qalandar pakistan pa khudkush hamla qaabil e muzammat : Khusro Baba

جیورگی میں خانہ کعبہ کی بے حرمتی اور درگاہ حضرت شہباز قلندرؒ پاکستان پر خودکش حملہ ،قابل مذمت
تقدس مآب حضرت سید شاہ گیسودرازخسروحسینی قبلہ سجادہ نشین بارگاہ حضرت خواجہ بندہ نوازؒ گلبرگہ کا بیان

گلبرگہ 22؍فروری :تقدس مآب حضرت ڈاکٹر سید شاہ گیسودراز خسرو حسینی صاحب قبلہ سجادہ نشین درگاہ حضرت خواجہ بندہ نوازؒ گلبرگہ نے حال ہی میں جیورگی اور گلبرگہ ضلع کے دیگر مقامات میں پیش آئے خانہ کعبہ کی بے حرمتی اور پاکستان میں درگاہ حضرت شہباز قلندرؒ پر ہوئے خودکش اور دہشت گردانہ حملہ کے واقعہ کی سخت الفاظ میں مذمت فرمائی ہے۔حضرت خسرو حسینی قبلہ نے اپنے ایک اخباری بیان میں فرمایا ہے کہ خانہ کعبہ کی بے حرمتی اور درگاہ حضرت شہباز قلندرؒ میں ہوئے دہشت گردانہ حملہ کی ہر طرف سے مذمت کی جانی چاہیئے کیوں کہ کعبۃ اللہ جو ساری کائنات کے مسلمانوں کا ایک مرکزی مذہبی مقام ہے، جس کی جانب رخ کرکے نماز ادا کی جاتی ہے اس کی بے حرمتی ناقابل برداشت ہے۔ دنیا کا کوئی مذہب کسی عبادت گاہ کی بے حرمتی کی اجازت نہیں دیتا۔ لہٰذا کعبۃ اللہ کی بے حرمتی ہویا کسی صوفی کی درگاہ پر حملہ واقعی افسوسناک ہے۔

حضرت خسرو حسینی صاحب نے مزید فرمایا ہے کہ صوفیائے کرام کی درگاہوں میں بلالحاظ مذہب و ملت لوگ حاضری دیتے ہیں اور ان سے فیض یاب ہوتے ہیں،صوفیائے کرام اپنی زندگی میں امن و شانتی کا پیکر بنے رہے۔حضرت خسرو حسینی صاحب نے مزید فرمایا کہ اسلام کی بنیادی تعلیم ہی امن و سلامتی ہے،انھوں نے قرآن مجید کے حوالے سے فرمایا کہ اللہ تعالیٰ فرماتا ہے کہ جس نے کسی کو قتل کیا ہو جان کے بدلے جان یا پھرزمین میں فساد کیا ہو تو گویا اس نے تمام لوگوں کو قتل کیا۔ اور جس نے ایک کی جان بخشی تو گویا اس نے بنی نوع انسانی کی جان بخشی۔حضرت خسرو حسینی صاحب نے بیان میں مزید فرمایا ہے کہ ساری دنیا میں پیش آرہے دہشت گردی کے واقعات ہم سب کے لیے رنج و غم اور افسوس کا باعث ہیں۔ دنیا جس میں مختلف مذاہب کے لوگ رہتے اور بستے ہیں اور آپس میں یکجہتی ، بھائی چارہ اور امن و شانتی ، پریم و محبت کے ساتھ زندگی گزارتے ہیں ،ایسے میں چند مٹھی بھر ایسے انسانیت کے دشمن عناصر بھی ہیں جو نہ صرف ہماری آپسی سا لمیت اور قومی یکجہتی میں رخنہ ڈالنا چاہتے ہیں بلکہ مذہب اسلام کو بدنام کرنا چاہتے ہیں۔بہرحال دہشت گردی انتہائی حیوانیت کا ثبوت دیتی ہے۔ حال ہی میں پیش آئے کعبۃ اللہ کی بے حرمتی والا واقعہ ہو یا درگاہ شریف پر خودکش حملہ ہو جس میں لوگوں کی بلا وجہ جان چلی گئی یا مالی نقصان پہنچا ہم سب کے لیے یہ خبر انتہائی افسوس ناک ہے ۔ ہم کو یہ یقین رکھنا چاہیئے کہ ایسی درندگی اور حیوانیت پسند لوگوں کا کوئی مذہب نہیں ہوتا۔

حضرت خسرو حسینی صاحب نے بیان کے آخر میں فرمایا ہے کہ وہ بحیثیت سجادہ نشین بارگاہ حضرت خواجہ گیسودراز بندہ نوازؒ وہ جیورگی اور گلبرگہ ضلع کے دیگر مقامات میں پیش آئے کعبۃ اللہ کی بے حرمتی اور درگاہ حضرت شہباز قلندرؒ پاکستان میں ہوئے دہشت گردانہ واقعہ کی پُرزور مذمت کرتے ہیں۔ حضرت خسرو حسینی صاحب نے عوام الناس سے اپیل کی ہے کہ وہ صبر تحمل سے کام لیں ،حضرت خسرو حسینی صاحب نے توقع ظاہر کی ہے کہ تمام عالم انسانی کے گوشہ گوشہ سے اس حرکت کی مذمت کی جائے گی ،اس بات کی قوی امید ہے کہ ہم سب ہندوستانی بلا لحاظ مذہب و ملت اور انسانیت کی بنیادوں پر مل کر اس قسم کے انسان سوز واقعات کی پُر زور مذمت کریں گے۔

حضرت خسرو حسینی قبلہ نے دعا فرمائی ہے کہ اے پروردگار قطب الاقطاب حضرت خواجہ گیسودراز بندہ نوازؒ کے وسیلے سے ہمارے ملک میں اور ساری دنیا میں امن و شانتی عطا فرما اور آپس میں اتحاد و اتفاق سے رہنے کی توفیق عطا فرما اور ہمارے دلوں سے نفرتوں کو مٹاکر محبت ڈال دے۔ آمین۔

Comments
Facebooktwittergoogle_plusredditpinterestlinkedinmail

Leave a Reply

Facebook