Dr Sharan Prakash Patil ke istife ki maang ke sath hazaro Dalito ka Ehtejaj, Congress ko bhi diya ultimatum.

ضلع نگران وزیر ڈاکٹر شرن پرکاش پاٹل کو کابینہ سے برخواست کرنے کا مطالبہ .گلبرگہ میں دلتوں پر ہو رہے مظالم مظالم کو روکنے میں ضلع انتظامیہ ناکام

گلبرگہ یکم فروری:دلت سنگھٹنے گالاسمن وے سمیتی نے آج شہر کے ایم ایس کے ملز تا گنج ایک احتجاجی ریالی نکالی۔ احتجاجیوں نے ضلع انتظامیہ کی شدید مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ دلتوں کو تحفظ فراہم کرنے میں انتظامیہ پوری طرح ناکام ہواہے ۔ اسی لئے سدرامیا کو چاہئے کہ وہ ریاستی وزیر طبی تعلیم ڈاکٹر شرن پرکاش پاٹل ضلع نگران وزیر کو فوری طور پر برخواست کریں ۔ احتجاجیوں نے ضلع نگران وزیر کے ساتھ ساتھ ڈپٹی کمشنر اور ایس پی کو بھی برخواست کرنے کی بات کہی ۔
مظاہرین نے مطالبہ کیا کہ سعودی عرب میں مقیم ایک الند کے ساکن سنتوش جماگے نے سوشیل میڈیا کے ذریعے بابا صاحب ڈاکٹر بھیم راؤ امبیڈکر کے خلاف توہین آمیز الفاظ پوسٹ کیا ہے اور اُس کے خلاف قانونی کارروائی کرتے ہوئے اُس شخص کو سعودی عرب سے ہندوستان لا کر کارروائی کرنے کی کوشش کی جائے ۔ سوشیل میڈیا پر توہین آمیز الفاظ پوسٹ کرنے اور دوسرے کئی معاملات جو دلتوں کے ساتھ رونما ہو رہے ہیں اُن سب کی جانچ کے لئے حکومت ایک اعلیٰ سطحی کمیٹی تشکیل دے جو غیر جانبداری سے اس کی جانچ کرے۔

تنظیم نے مطالبہ کیا کہ امبیڈ کر ڈیولپمنٹ کارپوریشن کے فنڈ کا استعمال کرتے ہوئے مظالم کے متاثرین کو فوری امداد جاری کرتے ہوئے اُنہیں راحت فراہم کی اور بیر وزگار دلت نوجوانوں کا استعمال کرتے ہوئے اُنہیں بھی خود روزگار فراہم کیا جائے۔ اُنہوں نے مطالبہ کیا کہ دیہی ترقیات، پنچایت راج اور دیگر بلدیاتی محکمہ میں خدمات انجام دینے والے ملازمین کی تنخواہیں فوری طور پر ادا کی جائے ۔

اس عظیم ریالی کی وجہ سے آج شہر تقریبا تمام راستے جام رہے ، جگت سرکل سڑک روڈ کو دوپہرایک بجے سے شام 5بجے تک گاڑیوں کے لئے بند کردیا گیاتھا ۔ ریالی کی قیادت جن پرکاش سوامی میسورو اولنگا پیڈی مٹھ نے کی ۔ ریالی میں دلت قائدین وٹھل دوڈمنی، بسنّا سنگھے،سریش ہادی منی اور دوسری دلت تنظیموں کے لیڈران و کارکنان کی کثیر تعداد موجود تھی

Comments
Facebooktwittergoogle_plusredditpinterestlinkedinmail

Leave a Reply

Facebook